کھلاڑی سے وزیر اعظم بننے والے دنیا کے 5 سیاستدان

Aug 21, 2018 | 12:33

دنیائے سیاست میں 5 ایسے سیاستدان موجود ہیں جنہوں نےسیاست کے میدان میں آنے سے پہلے کرکٹ کے میدانوں میں اپنا نام بنایا۔

کرکٹ میں نام بنانے کے بعد انہوں نے بطور وزیر اعظم اپنے ملک کی باگ ڈور سنبھالی۔ ان کھلاڑیوں کی فہرست میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان ان دنوں سب سے زیادہ موضوع بحث ہیں۔ جنہوں نے 18 اگست کو پاکستان کے 22 ویں وزیر اعظم کی حیثیت سے اپنے عہدے کا حلف اٹھایا۔ 65 سالہ عمران خان نے پاکستان کے لئے 88 ٹیسٹ اور 175 ون ڈے کے علاوہ 382 فرسٹ کلاس میچ بھی کھیلےہیں، جبکہ پاکستان نے 1992 کا ون ڈے ورلڈ کپ ان کی قیادت میں ہی جیتا تھا۔

عمران خان کے علاوہ پاکستان کے3 باروزیر اعظم رہنے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف بھی فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل چکے ہیں۔ انہوں نے سال 1973 میں ریلویز کے لئے فرسٹ کلاس میچ کھیلا تھا تاہم وہ اس میں بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوگئے تھے۔

سر ایلک ڈگلس 1963 میں برطانیہ کے وزیر اعظم بنے ، ان کے عہدے کی مدت ایک سال تھی۔سر ایلک نے میڈل سیکس کاؤنٹی اور آکسفورڈیونی ورسٹی کی جانب سے کرکٹ کھیلی ، اس کے علاوہ انہوں نے 1924 میں اپنا فرسٹ کلاس ڈیبیو بھی کیا اور 10 میچ کھیلے۔وہ 1966 میں ایم سی سی کے صدر بھی رہ چکے ہیں۔

سر فرانسس ہنری ڈیلن بیل 1925 میں نیوزی لینڈ کے پہلے ایسے وزیر اعظم تھے جن کی پیدائش بھی نیوزی لینڈ میں ہوئی تھی۔ ڈیلن بیل نے نیوزی لینڈ کے شہر ویلنگٹن کی نمائندگی کرتے ہوئے 1874 سے 1876تک فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلی تھی۔ان کی بطور وزیر اعظم عہدے کی مدت 20 دن تھی۔

راتو سر کیمی سیسی مارا فیجی کے پہلے وزیر اعظم تھے ۔ انہوں نے فیجی کے لئے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلی اور نیوزی لینڈ کے دورے پر بھی گئے۔ راتو سر کیمی سیسی مارا نے فیجی کی نمائندگی کرتے ہوئے ویسٹ انڈیز کے خلاف تاریخی فتح بھی حاصل کی تھی۔

ان کا شمار فیجی کے بانیوں میں ہوتا ہے۔ان کی بطور وزیر اعظم عہدے کی مدت21 سال رہی جبکہ بطور صدر وہ 7سال اس منصب پر فائز رہے۔

مزیدخبریں