راوی کنارےغیرقانونی ہاؤسنگ اسکیموں والے،ذاتی مکان کا جھانسہ دیکر،غریبوں کی کمائی دونوں ہاتھوں سے لوٹنے لگے

Aug 26, 2018 | 13:35

لاہورمیں دریائےراوی کےکنارےآبادی میں مسلسل اضافہ انسانی جانوں کےلئےخطرہ بننےلگا،سستے گھروں کی تلاش میں مارے مارے پھرنے والے شہری دریا کنارے آباد غیر قانونی ہاوسنگ سوسائیٹیز کے جھانسے میں آنے لگے،ایک محتاچ اندازے کے مطابق دس لاکھ افراد دریائےراوی کے کناروں پر آباد ہیں مکینوں کا کہنا تھاکہ شہر کے مقابلے میں یہاں مکان سستے ہیں اس لئے انہوں نے یہاں آکر گھر بنائے ۔حکومت کی جانب سے ایسی ہاوسنگ سوسائیٹیوں کی روک تھام کی بجائے بجلی سمیت کئی سہولتیں بھی فراہم کر دی گئی ہیں،اس بڑھتی ہوئی آبادی کا کسی ریاستی ادارے نے اب تک نوٹس نہیں لیا،اوررہی سہی کسر جھونپڑی مکینوں نے پوری کر دی جس کے باعث اب دریائے راوی کی اصل خوبصورتی گہنا گئی ہےہمسائہ ملک بھارت کی جانب سے کسی بھی وقت دریائے راوی میں پانی چھوڑا جا سکتا ہے یہی نہیں موسم کی صورتحال کے پیش نظر تیز بارشیں بھی دریا میں طغیانی کا سبب بن سکتی ہیں عدم حکومتی توجہ کے باعث دریائے راوی کے کنارے بڑھتی یہ آبادی کسی سانحے کا سبب بن سکتی ہے

مزیدخبریں