عثمان ڈار دوبارہ گنتی میں بھی ناکام ہوگئے

Jul 29, 2018 | 11:16

سیالکوٹ میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے تہتر کے پوسٹل بیلٹ وصول ہونے کے بعد خواجہ آصف کے ووٹوں کی تعداد ایک لاکھ سترہ ہزار دو تک پہنچ گئی جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے عثمان ڈار کے ووٹوں کی تعداد ایک لاکھ پندرہ ہزار پانچ سو چھیانوے ہوگئی ہے۔ غیر سرکاری غیر حتمی نتیجے کے مطابق عثمان ڈاردوبارہ گنتی میں کامیابی نہ حاصل کرسکے۔ خواجہ آصف کی کامیابی برقرارہے۔ دوسری جانب امیدواروں کی درخواست پرووٹوں کی دوبارہ گنتی کا عمل بھی جاری ہے۔ گوجرانوالہ میں صوبائی اسمبلی کی نشست پی پی چون میں پی ٹی آئی کے امیدوار رضوان اسلم بٹ نے ریٹرننگ افسر کی عدالت میں رزلٹ کو چلینج کر رکھا ہے۔ ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے دوران سیشن کورٹ کے اردگرد سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئےگئے ہیں۔ پولیس کی بھاری نفری سیشن کو رٹ کے اطراف میں تعینات ہے اور غیر متعلقه افراد کا داخلہ بند ہے۔ اس حلقہ میں مسلم لیگ ن کے امیدوار عمران خالد بٹ کا میاب قرار پائے تھےجبکہ تحریک انصاف کے امیدوار رضوان اسلم بٹ دوسرے نمبر پر تھے۔ مسلم لیگ ن کے امیدوار کی چودہ سو ستاون ووٹوں سے برتری کوتحریک انصاف کے امیدوار نے چیلنج کر دیا تھا۔ علی پور چٹھہ پی پی باون میں گیارہ سو تیرہ ووٹ سے ہارنے والے تحریک انصاف کے امیدوار محمد احمد چٹھہ کی درخواست پرووٹوں کی دوبارہ گنتی جاری ہے۔ تحریک انصاف کے محمد احمد چٹھہ نے چون ہزار پانچ سو ستانوے جبکہ مسلم لیگ ن کے عادل بخش چٹھہ نے پچپن ہزار سات سو دس ووٹ لئے تھے۔

مزیدخبریں