اسلام آباد کی احتساب عدالت میں احاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کے دوران استغاثہ کے گواہ بشارت اور عمر دراز کا بیان قلمبند کرلیا گیا

Aug 31, 2018 | 11:17

احتساب عدالت میں اسحاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت جج محمد بشیر نے کی۔ سماعت کے آغاز میں عدالت نے شریک ملزم سعید احمد کو حاضری لگانے کے بعد جانے کی اجازت دے دی۔استغاثہ کے گواہ بشارت محمود نے عدالت کو بتا یا کہ نیب راولپنڈی میں 2004 سے کلرک کی خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔ یکم نومبر 2017 کو نیب لاہور سے کال آف نوٹس ملا تھا ۔استغاثہ کے گواہ بشارت محمود اور عمر دراز کا بیان قلمبند کر لیا گیا ۔ تیسرے گواہ کا بیان قلمبند نہیں ہو سکا۔عدالت نے اشتیاق احمدکو مزید دستاویزات کےساتھ 5 ستمبر کو طلب کر لیا۔عدالت نے مزید تین گواہوں کو طلب کرلیا گواہوں میں اشتیاق احمد، محسن احمداور طارق سلیم شامل ہیں۔کیس کی سماعت 5 ستمبر تک ملتوی کر دی گئی

مزیدخبریں