ٹیسٹ کرکٹ میں رن آٹ پر وکٹیں گنوانے میں پاکستان 3نمبر پر موجود

ٹیسٹ کرکٹ میں رن آٹ پر وکٹیں گنوانے میں پاکستان 3نمبر پر موجود

گزشتہ3سال کی ٹیسٹ کرکٹ میں رن آﺅٹ پر وکٹیں گنوانے میں پاکستان تیسرے نمبر پر ہے۔گزشتہ دنوں کولمبو ٹیسٹ میں سری لنکن ٹیم نے بڑے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے زمبابوے کو 4 وکٹ سے زیر کیا، اس دوران پہلی اننگز میں اہم مواقع پر2 بیٹسمینوں کے رن آﺅٹ ہونے کی وجہ سے مہمان ٹیم حاوی ہوگئی تھی، اپل تھارنگا71 اور دلروان پریرا 33رنز پر وکٹیں گنوا بیٹھے جس کی وجہ سے آئی لینڈرز پہلی اننگز میں برتری حاصل نہ کرپائے، وکٹوں کے درمیان دوڑتے ہوئے غلطیاں کرنے کی سری لنکن ٹیم عادی مجرم ہے، 2014سے اب تک آئی لینڈرزنے 36ٹیسٹ میں 17 وکٹیں اس انداز میں گنوائیں جبکہ انگلینڈ 41 مقابلوں میں 15 رن آﺅٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔پاکستان نے بھی اس عرصے میں15وکٹیں رننگ میں غلطیاں کرتے ہوئے گنوائیں لیکن میچزکی تعداد 32ہے، آسٹریلیا نے 38 مقابلوں میں 14 جبکہ ویسٹ انڈیز نے 28میچز میں12بار وکٹیں گنوانے کیلیے بولرز کے بجائے فیلڈرز کو زحمت دی، جنوبی افریقہ نے 32میچز میں 11،بھارت نے 36میں 10وکٹوں کا نقصان رن آﺅٹ کی وجہ سے اٹھایا،بنگلہ دیش19اورنیوزی لینڈ33میچز میں9،9بار یہی صدمہ اٹھا چکے۔حیران کن بات یہ ہے کہ 3 سال کے دوران 9 ٹیسٹ میں زمبابوے کا ایک بیٹسمین بھی رن آﺅٹ نہیں ہوا۔

Most Popular